ہم مر چکے تھے۔۔۔۔! – یاسر پیرزادہ

Hum mar chukay thay...! - Yasir Pirzada